’ڈنڈا چلایا نہیں، ڈالر نیچے آنا شروع ہوگیا‘

’ڈنڈا چلایا نہیں، ڈالر نیچے آنا شروع ہوگیا‘

وزیر خزانہ اسحاق ڈار کا کہنا ہے کہ ڈالر کی صحیح قدر 200 روپے سے نیچے ہے، ابھی ڈنڈا چلایا ہی نہیں، ڈالر نیچے آنا شروع ہوگیا۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اسحاق ڈار نے کہا کہ ڈالر نیچے روپیہ اوپر جانے سے قوم کو فائدہ ہو رہا ہے، ڈالر نیچے آنے سے 2600 ارب روپے کے قرضوں میں کمی آئی ہے۔

اسحاق ڈار نے کہا کہ ڈالر نیچے لانے کیلئے کچھ نہیں کیا، سسٹم نے خود ہی درستگی شروع کردی۔

ڈالر مہنگا بیچنے والے بینکوں کے خلاف کارروائی کے سوالات پر اسحاق ڈار نے جواب دینے سے گریز کیا۔

اسحاق ڈار نے کہا کہ سابق وزیر خزانہ شوکت ترین کی حکمت عملی غیر ذمے دارانہ تھی، لیکن ان کے کام پر تبصرہ نہیں کرنا چاہتا۔

وفاقی وزیرخزانہ  نے کہا کہ وعدہ کیا تھا کہ ایکسپورٹ انڈسٹری کو 9سینٹ پر بجلی دی جائے گی، ایکسپورٹ انڈسٹری کو دو ماہ 9 سینٹ پر بجلی دی گئی، پاکستان کو ایکسپورٹ کی ضرورت ہے، اپٹما نے 12.7 فیصد ایکسپورٹ بڑھائی، آج برآمدکنندگان کے ساتھ مذاکرات ہوئے ہیں، ٹیکسٹائل برآمد کنندگان نے برآمدات 12.7 فیصد بڑھائیں۔

اسحاق ڈار نے کہا کہ وسائل میں رہتے ہوئے ایکسپورٹر اور کسانوں کیلئے جو ہوا کر رہے ہیں، برآمد کنندگان سے روپے میں بات ہوئی ہے، اب یہ سینٹس میں بات نہیں کریں گے، ٹیکسٹائل سیکٹر سے فی یونٹ بجلی 19روپے 99 پیسے لیا جائے گا، میری واپسی ہوتے ہی مارکیٹ نے اپنا کام شروع کر دیا۔

وزیرخزانہ نے کہا کہ پاکستان کو برآمدات میں اضافے کی اشد ضرورت ہے، حکومت کو سالانہ  90 سے  100 ارب روپے کی سبسڈی دینا پڑے گی، بجلی نرخ صرف ٹیکسٹائل سیکٹر کیلئے نہیں، پانچوں برآمدی شعبوں کیلئے ہے۔

اسحاق ڈار نے کہا کہ مجھے آئی ایم ایف کو اعتماد میں لینے کی ضرورت نہیں، مجھے معلوم ہے کیا کر رہا ہوں، میرے پاس جواز موجود ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *