Chitral Today
Latest Updates and Breaking News

پی ٹی وی نیشنل کا اچھا اقدام

داد بیداد

ڈاکٹرعنایت اللہ فیضی
پا کستان ٹیلی وژن نیشنل کے ارباب اختیار نے صوبہ خیبر پختونخوا کو 24گھنٹوں کا پروگرام دیدیا ہے صوبے کی متنوع ثقافتی شناخت اور زرخیز ادبی و تاریخی پس منظر کو سامنے رکھتے ہوئے پی ٹی وی نیشنل نے جو فیصلہ کیا ہے اس کو صوبے کے طول وعرض میں سراہا جارہا ہے

چند سال پہلے پی ٹی وی نیوز، پی ٹی وی سپورٹس اور پی ٹی وی ہوم کے بعد پی ٹی وی نیشنل کا اجرا ہوا تو اس کا کام بھی وضع کیا گیا، کام یہ تھا کہ پا کستان کے چاروں صوبوں کے ساتھ آزاد کشمیر گلگت بلتستان اور خیبر پختونخوا سے ملحقہ قبائلی علا قوں کی ثقافتوں کو قومی سطح پر بھی اور عالمی سطح پر بھی اجا گر کیا جائے تاکہ پا کستان کی نرم و ملا ئم ساکھ اپنی جگہ بنائے اور سیاحوں کے لئے پاکستان میں موا قع یا بڑے بڑے امکانات سب کو اس طرح راغب کریں اس کام کا بیڑا اٹھانے کے لئے دانشوروں، ادیبوں، شا عروں، فنکا روں اور ہدایت کاروں کی ایک ٹیم بنائی گئی اس ٹیم نے اپنی تحقیقی اور تخلیقی سفر کے لئے سب کو ساتھ ملا کر چلنے کا طریقہ اختیار کیا پھر تخلیقی سفر شروع کیا سندھ، پنجاب، بلوچستان، آزاد کشمیر اور خیبر پختونخوا سے مواد اکھٹا کیا جب کام کو توسیع دے کر ملک کی ثقافتی اکائیوں کو اس میں شامل کرنے کی باری آئی تو پرائیویٹ پروڈکشن نے میدان مار لیا، ڈش اور سٹیلاءٹ نے اپنا راستہ بنایا پاکستان ٹیلی وژن کے پروں کو کاٹ دیا گیا، پروڈکشن کے لئے پروگرام کے جو فنڈ مختص تھے ان پر قینچی چلائی گئی اور پی ٹی وی کے دیگر چینلوں کی طرح پی ٹی وی نیشنل کو بھی بے دست و پاکر دیا گیا

چنانچہ اس چینل کی تو سیع کے منصو بے دھر ے کے دھرے رہ گئے، خدا خدا کر کے جولائی2023 میں حکومت نے پی ٹی وی نیشنل کو ایک لمبی جست لگا نے کی اجا زت دی اور خیبر پختونخوا کے لئے 24گھنٹوں کے نشریات کی اجا زت دے دی خیبر پختونخوا، ملحقہ قبا ئل اور گلگت بلتستان میں 27زبا نیں بولی جا تی ہیں ہر زبان کی اپنی مو سیقی ہے الگ ساز ہیں روا یتی دھنوں میں محفلوں کا دستور ہے ان میں سے 12زبانیں ایسی ہیں جو مقبوضہ کشمیر اور افغا نستان کی سر حدات پر سر حد کے دونوں اطراف میں بو لی جا تی ہیں

ان زبانوں میں خبریں اور دیگر ادبی و ثقا فتی پر وگرام ، فیچر ، ڈرامے وغیرہ نشر ہو نگے تو سر حد پار بھی دیکھے جائینگے جس کا دہرا فائدہ ہو گا خیر سگا لی کا پیغام سرحد پار بھی پہنچ جائے گا روا یتی طور پر ریڈیو پا کستان اور پا کستان ٹیلی وژن نے مختلف ثقا فتی اکا ئیوں کی نما ئندگی کرنے والے ادیبوں، شاعروں اور فنکاروں کو ایک چھت کے نیچے جمع کرنے میں ہر دور میں پہل کی ہے اور اس کے دور رس نتاءج بھی سامنے آئے ہیں ایسے روابط کے نتیجے میں علا قائی زبانوں یا چھوٹی بڑی زبانوں کی جگہ تما م زبانوں کو پاکستانی زبا نوں کا نا م دیا گیا علا مہ اقبال اوپن یو نیور سٹی میں پا کستانی زبا نوں کا با قاعدہ شعبہ قائم ہوا، اکا دمی ادیبیات پا کستان، لوک ورثہ، پا کستان نیشنل کونسل آف آرٹس اور ادارہ فروغ قومی زبان جیسے وقیع قومی ادا روں نے ملک کی تمام زبانوں کو پا کستانی زبانوں کا درجہ دیا

پارلیمنٹ کی قائمہ کمیٹی نے اس حوالے سے با قاعدہ سفا رشات مرتب کیں خیبر پختونخوا کے پشاور سنٹر کو پی ٹی وی نیشنل کی نشریات کا دائرہ 24گھنٹوں تک بڑھانے کا حکم اس سلسلے کی اہم کڑی ہے سر دست پاکستان ٹیلی وژن کے مختلف مراکز اور مختلف چینلوں سے اردو اور انگریزی کے علا وہ پنجابی، سندھی، پشتو، ہند کو، بلوچی، براہوی، بلتی، کشمیری، شینا اور گوجری میں مختصر دورانیے کی خبریں نشر ہو تی ہیں پشاور سنٹر کی نشریات کو 24گھنٹے تک تو سیع دینے کے بعد کھوار میں خبروں اور گفتگو کا پرو گرام ہفتہ وار نشر ہوتا ہے ضرورت اس بات کی ہے کہ کھوار کو روزانہ کی بنیاد پر ایک گھنٹے کا وقت دیا جائے ساتھ ساتھ صوبے کی دیگر دردی زبانوں مثلاً کا لاشہ، گاو ری، توروالی اور کوہستانی کو بھی پی ٹی وی نیشنل کے پروگراموں میں مناسب جگہ دے کر قومی چینل کے گلدستے کو مکمل کیا جا ئے۔

You might also like

Leave a comment

error: Content is protected!!