Indigenous winter sports festival begins in kalash valley

IMG_8736 ڈی پی او چترال آصف اقبال مومند نے میچ کے افتتاح کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہا ۔ کہ خیبر پختونخوا کلچر ڈیپارٹمنٹ کی طرف سے ونٹر سپورٹس فیسٹول کیلئے مالی تعاون انتہائی قابل تحسین ہے ۔ یہ اس علاقے کا انتہائی دلچسپ ثقافتی کھیل ہے ۔ جو صدیوں سے کھیلا جاتا ہے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ اس کھیل کے انعقاد میں مقامی معاون ادارہ اے وی ڈی پی کا کردار بھی قابل تعریف ہے ۔ جنہوں نے کلچر ڈیپارٹمنٹ سے رابطہ کاری کرکے یہ ممکن بنا یا ۔ ڈی پی او نے کہا ۔ کہ فیسٹول کیلئے فل پروف سیکیورٹی کا انتظام کیا گیا ہے ۔ اور کھیل کے دوران امن و امان کو برقرار رکھنے کیلئے ہر ممکن کو شش کی گئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ سیاحوں کیلئے کلچر سے بھرا ایک بہترین تفریح ہے ۔ جس سے مقامی اور باہر کے لوگ محظوظ ہوں گے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ چترال واحد ضلع ہے ۔ جہاں کے لوگ امن کو سب سے مقدم سمجھتے ہیں ۔ یہی وجہ ہے ۔ کہ یہاں بد آمنی کا کوئی مسئلہ درپیش نہیں ہے ۔ فیسٹول میں رمبور ، بمبوریت اور بریر وادیوں کی دس ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں ۔اور روزانہ دو ٹیموں کا مقابلہ ہو گا ۔ جبکہ فائنل میچ 24فروری کو کھیلا جائے گا ۔ کریک گاڑ کی دلچسپ بات یہ ہے ۔ کہ اس میں گاؤں کے گاؤں مقابلے میں میدان میں اترتے ہیں ۔ جن میں خواتین بھی اپنے گاؤں کے کھلاڑیوں کا حوصلہ بڑھانے میں شامل ہوتی ہیں ۔ اور کھیل گاؤں کے تمام لوگوں کیلئے غیرت کا سوال بن جاتا ہے ۔ ونٹر سپورٹس فیسٹول کے تمام میچوں میں کامیاب ہونے والی ٹیم کو مقامی رواج کے مطابق ایک بکرے کی رقم انعام کے طور پر دیا جاتا رہے گا ۔ اور مجموعی طور پر آٹھ بکرے اس کھیل میں کام آئیں گے ۔ جبکہ 24فروری کو فائنل میچ کے موقع پر ایک دن کے بادشاہ کے چناؤ کیلئے دو بکرے بطور انعام دیے جائیں گے ۔ منتخب بادشاہ اپنی طرف سے بیل ذبح کرکے حاضریں کو دعوت دے گا ۔ اس دوران اُن کے احکامات کی تعمیل گاؤں والوں پر لازمی ہو گی ۔ سنو گاف کے پہلے میچ کے اختتام پر مہمان ممبر ڈسٹرکٹ کونسل چترال رحمت الہی ،صوبیدار پاک آرمی اور منیجر اے وی ڈی پی وزیر زادہ نے انعامات تقسیم کئے۔ اس موقع پر انہوں نے فیسٹول کو کامیاب بنانے کے سلسلے میں کالاش پیپل ڈویلپمنٹ نیٹ ورک کے چیف لوک رحمت اور اُن کی ٹیم کی کو ششوں کو سراہا ۔]]>

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *