Flood-hit people still await implementation of promises

apmlانعام اللہ نے سیلا ب کو قدرت کی طرف سے امتحان اور قوم کی اعمال کا نتیجہ قرار دیتے ہوئے کہا۔ کہ حالیہ دنوں کے سیلاب سے زیادہ تر اپر چترال متا ثرہوا ہے۔ جسمیں میں اپر چترال کا سب سے بڑا مسئلہ بجلی کا ہے۔ جومکمل طورپر تباہ ہو چکا ہے۔ جس پر ابھی تک انتظامیہ نے کو ئی مثبت قدم نہیں اُٹھا یا ہوا ہے۔ مصیبت کی اس گڑی میں ہم ایس آر ایس پی اوراے کے آر ایس پی کے بھی بہت مشکور ہے۔ جو چترال کے متا ثر ہ علا قوں میں مختلف امداد کے ساتھ ساتھ مختلف مقامات پر بجلی گھر بنانے میں مصروف ہیں۔ اُنہوں نے فیڈریشن کی طرف سے مختلف این جی اوز کو خراج تحسین پیش کیا۔اُنہوں نے کہا کہ اپر چترال میں بر یپ، موژگول اور ریشن کے عوام سب سے زیادہ متاثر ہوئے جو کہ بغیر چھت ، غاروں ، ٹینٹوں میں رہنے پر مجبور ہو کر انتظامیہ کی طرف سے امداد کے منتظر ہیں۔ وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف ، وزیر اعلیٰ خیبر پختوانخواہ پر ویز خٹک نے اپنے دورہ چترال کے موقع پر چترال کو آفت زادہ قرار دیکر متاثرین سے ہمدری کا اظہار کرتے ہوئے کچھ اعلانات کئے تھے۔ جو ابھی تک صحیح معنوں میں متاثرین تک نہیں پہنچے۔ اُنہوں نے انتظامیہ سے اپیل کی کہ فوری طور پر اس کانوٹس لیا جائے۔ اور موسم سرما کے بارشوں سے پہلے پہلے متاثرین کیلئے رہنے کی چھت مہیا کیا جائے ۔اُنہوں نے کہاکہ گورنر خیبر پختونخوا سردار مہتاب احمد خان نے بھی چترالوں سے ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے چترالی طالب علموں کیلئے ایک تعلیمی سال کا فیس معاف کر نے کا اعلان کیا تھا،جو ابھی تک اعلان تک ہی محدود ہیں۔اُنہوں نے متعلقہ حکام سے مطالبہ کیا۔کہ اس اعلان پر بھی عمل درآمد کیا جائے ۔]]>

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *