PPP hot favourite to win LG polls: MPA

چترال(بشیر حسین آزاد) چترال سے صوبائی اسمبلی کے ممبر اور پی پی پی کے ضلعی صدر سلیم خان نے کہا ہے کہ آنے والے بلدیاتی انتخابات میں ضلع چترال میں شاندار کامیابی پی پی پی کا مقدر ہے جس میں ضلعے کے کونے کونے سے افرادا پنی اپنی پارٹیوں کو چھوڑ کر شامل ہورہے ہیں جوکہ اس پارٹی کی مقبولیت اور قیادت پر ان کی اعتماد کا مظہر ہے۔

بدھ کے روز چترال پریس کلب میں شمولیتی تقریب کے بعد پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ حالات پی پی پی کے لئے انتہائی سازگار ہیں لیکن اس کے باوجود پی پی پی نے سولو فلائٹ کے بجائے اکثر حلقوں میں دوسری جماعتوں کے سیٹ ایڈ جسٹمنٹ کی ہے ۔

اس موقع یوتھ فورم کے صدر اور پرائم منسٹر یوتھ لون پروگرام کے کوارڈینیٹر قاضی فیصل نے پی پی پی میں شمولیت کا اعلان کرتے ہوئے کہاکہ نوجوان طبقے کے لئے پی پی پی کی خدمات اور کاوشوں کو سامنے رکھتے ہوئے انہوں نے مسلم لیگ (ن) سے مستعفی ہوکر اس پارٹی میں شامل ہونے کا فیصلہ کرلیا ہے ۔ پارٹی میں شمولیت کے بعد ضلعی صدر سلیم خان نے قاضی فیصل کو پارٹی کی طرف سے ضلع کونسل چترال ون وارڈ کے لئے امیدوار نامزد کرنے کا بھی اعلان کیا۔

پارٹی کے ضلعی کابینہ میں شامل اور خاتون ونگ کے نائب صدر جہان آراء بیگم بھی پی پی پی میں شمولیت کا اعلان کردیا جبکہ جماعت اسلامی کے ایک کارکن سلمان خان بھی پی پی پی میں شامل ہونے کا اعلان کیا۔ ضلعی صدر سلیم خان نے پارٹی میں شمولیت اختیار کرنے والوں کو خوش آمدید کہتے ہوئے ان کو پھولوں کا ہار پہنادیا۔ پی ٹی آئی کے ساتھ انتخابی اتحاد کے حوالے سے انہوں نے ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے کہاکہ مختلف حلقوں میں اور مختلف سیٹوں پر حالات کے تقاضے کے مطابق ایڈجسٹمنٹ کیا گیا ہے ۔اس موقع پر پی پی پی کے دیگر رہنما سید برہان شاہ ایڈوکیٹ، بشیر احمد خان ، جاوید اختر ،عالم زیب ایڈوکیٹ اور دوسرے بھی موجود تھے۔

]]>

2 Replies to “PPP hot favourite to win LG polls: MPA”

  1. I would like to extend my warmest congratulations to respected brother Qazi and alll the new joining members. People better know the ideology and practical work of PPP for them,Bhutto is always here because his philosophy,his services and his ideology is working for the best.We hope for best results

  2. Looking at the ppp leaders leaving the party for good and some ppp leaders contesting the elections in protest,there does not seems to be any prospects for ppp. People r now more aware and will reject the people using bhuto name.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *